Uncategorized
Leave a Comment

خو ن کا کھیل اب بلوچستان میں


                                                     سائرہ ظفر

مری قسمت میں یا رب کیا نہ تھی دیوار پتھر کی 

کہاں تک رووں اس خیمے کے پیچھے قیامت ہے

سو جا بیٹا ہا ں سونے سے پہلے یہ ضرور یاد رکھنا آیت الکرسی پڑھ کر سونا۔ہو سکتا ہے آج میرے بچے نے آیت الکرسی نہ پڑھی ہو۔چلو کوئی بات نہیں آج میں خود پڑھ کر پھونک دوں گی ۔لیکن ماں کیوں ،روزانہ مجھے بھی تلقین کرتی ہو اور خود بھی 3دفعہ آیت الکرسی پڑھ کر پھونکتی ہو۔بیٹا تین دفعہ پڑھنے سے بندہ اللہ تعا لی کی حفاظت میں رہتا ہے۔کوئی اس کا کچھ نہیں بگاڑ سکتا ہے۔10 اپریل 2015 کو بلوچستان کے علاقے تر بت میں دہشت گردوں نے خون کی ایسی ہولی کھیلی کہ خیمے میں سوئے ہوئے مزدوروںپر اندھا دھند فائرنگ کر دی سیکیورٹی کے نام کالے لباس میں ملبوس پولیس اہلکار کے کان پر جوں تک نہ رینگی دہشت گرد بغیر کسی ڈرو خوف کے خون کی ہولی کئی گھنٹے تک کھیلتے رہے یہاں تک کہ معصوم مزدوروں کو ہمیشہ کی نیند سلا دیا یہ معصوم مزدور اپنے گھروں سے کئی میل دور بلوچستان کے شہر تربت میں اس غرض سے ہجرت کر کے آئے تھے کہ وہ اپنے آشیانے میں رہنے والی جنت ّ،ماں اور پیار و شفقت،باپ، کو خوشی دے سکیں روز کی طرح دن گزارنے کے لیے اپنے اپنے خیموں میں چلے گے لیکن ان کی رات ان کے لیے آخری کی رات ہو گی ۔یہ کوئی نہیں جانتا تھا ۔ان کے لال ان کے ہاتھ کی کمائی نہیں بلکہ سفید چادر میں لپٹی ہو ئی جسد خاکی کے صرف آخری دیدار کے لیے آئے.جوان لاشو ں کے جسد خاکی کو دیکھ کر مائوں کے اوسان خطا ہو گئے ، کئی گھرو ں کے سہاگ اجڑ گئے۔

                                        

بد قسمتی سے میرا     پورے ملک کا چپا چپا دہشت گردی کی ذد میں اس طرح ڈبو چکا ہے جہاں سے نکلنا مشکل ہی نہیں بلکہ نا ممکن ہے سیکیورٹی کے نام پر عوام سے گھنا ئو نا نہ جا نے کب تک ہو تا رہے گا۔ حکومت نام کی چیز تو ہمارے ملک میں صرف براہ نام ہے ۔کلک سمائل پلیز تھوڑا لفٹ تھوڑا رائٹ او ہو ایسا نہیں چہرہ تھوڑا رونے والا بنائے تا کہ ایسا لگے کہ معصوم مزدوروں کے قتل کا دکھ کسی اور کو نہیں ۔بلو چستان کے وزیر ڈاکٹر عبدلمالک جنازوں کو کندھا دے کر فو ٹو سیشن مکمل کرایا اور میڈیا سے خوب داد اوصول کی

بس۔۔ شاہد آج ما ں کا لال بیوی کا مجازی خدا ،بیٹے اور بیٹی کے شفقت ناز نخرے اٹھا نے والا آیت الکرسی پڑھنا بھول گیا تھا۔                           !

This entry was posted in: Uncategorized
Tagged with: , ,

by

Vision 21 is Pakistan based non-profit, non- party Socio-Political organisation. We work through research and advocacy for developing and improving Human Capital, by focusing on Poverty and Misery Alleviation, Rights Awareness, Human Dignity, Women empowerment and Justice as a right and obligation. We act to promote and actively seek Human well-being and happiness by working side by side with the deprived and have-nots.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s