Uncategorized
Leave a Comment

کشمیرمیں خون کا کھیل


کشمیر کا چمن جو مجھے دلپذیر ہے

اس باغِ جان فزا کا یہ بلبل آسیر ہے

پاکستان اور بھارت دونوں مسئلہ کشمیر پر ایک بنیادی نظریے پر کھڑے ہونے کا دعوٰی کرتے ہیں۔ تقسیم ہند کے دوران جموں و کشمیر برطانوی راج کے کشمیر ایک ریاست ہوتا تھا۔جس کی 95 فیصد آبادی مسلم تھی۔ جب ہندوستان کو تقسیم کیا جارہا تھا تو جن علاقوں میں مسلم اکثریت تھی وہ علاقے پاکستان اور جہاں ہندو اکثریت تھی وہ علاقے بھارت کو دیئے گئے۔ پر کشمیر میں اکثریتی آبادی تو مسلمان تھے لیکن یہاں کا حکمران ایک سکھ تھا اور سکھ حکمران چاہتا تھا کہ بھارت کے ساتھ ہوجائے ۔ لیکن تحریک پاکستان کے رہنماؤں نے اس بات کو مسترد کیا۔ آج بھی پاکستان کا ماننا ہے کہ کشمیر میں مسلمان زیادہ ہیں اسلئے یہ پاکستان کا حصہ ہے اور بھارت کا ماننا ہے کہ اس پر سکھ حکمران تھا جو بھارت سے الحاق کرنا چاہتا تھا اسلئے یہ بھارت کا حصہ ہے ہمیشہ کی طرح  بھارت نے اس سال پھر عید  کے تہوار پر پھر کشمیریوں کو خون سے نہلانے والا عمل جاری رکھا ہوا ہے۔ کشمیر میں مسلسل چوتھے روز بھی حالات کشیدہ ہیں اور ہلاک ہونے والوں کی تعداد 3Occupied-Kashmir1 ہو گئی ہے۔

ہسپتال زخمیوں سے بھرگئے، ایمرجنسی نافذ مسلسل کرفیو کی وجہ سے لوگوں کو اشیائے ضروریہ کی شدید قلت کا سامنا کل جماعتی حریت کانفرنس نے آج منگل اور کل بدھ کو مکمل ہڑتال کی کال دیدی میر واعظ کی پر امن مظاہرین پر فائرنگ اور طاقت کا وحشیانہ استعمال کی شدید مذمت سرینگر(آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں مجاہد کمانڈربرہان مظفر وانی اور ان کے ساتھیوں کی شہادت کے تیسرے روز بعدبھی وادی کشمیر میں بھارتی فورسز کی دہشت گرد کاروائیاں اور معصوم شہریوں کے قتل عام کاسلسلہ جاری رہا،ہسپتال زخمیوں سے بھرگئے ہیں ، ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے ، مسلسل کرفیو کی وجہ سے لوگوں کو اشیائے ضروریات کی شدید قلت کا سامنا ہے، ۔گزشتہ تین روز کے دوران پرامن مظاہرین پر بھارتی فورسز کی اندھا دھند فائرنگ سے25افراد شہید ہو گئے۔مختلف مقامات پر مظاہرین اور بھارتی فورسز کے درمیان دن بھر جھڑپیں جاری رہیں اور سرینگر کے اسپتال زخمیوں سے بھرگئے۔ سنگم کے نزدیک مظاہرین نے ایک پولیس گاڑی کو ڈرائیور سمیت دریائے جہلم میں پھیک دیا جس میں ایک پولیس اہلکار ہلاک ہوگیا۔اس سے قبل ہفتے کو بارہ شہری شہید ہوئے تھے جبکہ دو روز کے دوران 450سے زائد افراد زخمی ہو ئے ہیں۔ وادی کشمیر کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہیں اور عملے کی چھٹیاں منسوخ کردی گئیں ہیں۔اس دوران مقبوضہ کشمیر کے اطراف میں پیر کومسلسل تیسرے روز بھی کرفیو اورسخت پابندیاں عائد رہی جس کی وجہ سے لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے اور انہیں اشیائے خورد و نوش خاص طورپر ادویات اور بچوں کے دودھ کی شدید قلت کاسامنا کرنا پڑا ۔ کرفیو کی وجہ سے دوکانیں اور کاروباری ادارے بند ہونے اور لوگوں کے گھروں سے باہر نکلنے پر پابندی ہے جس کے باعث انہیں دودھ ،آٹا،سبزی ،گھی اور دیگر اشیائے خورد و نوش کی شدید قلت کاسامنا ہے ۔ لوگوں نے ٹیلی فون پر ذرائع ابلاغ کو شکایت کی کہ گزشتہ2دنوں سے وہ گھروں میں محصور ہیں اور انکے پاس خوراک کا ذخیرہ ختم ہو چکا ہے ۔ میر واعظ نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کی اس کارروائی کو بدترین ریاستی دہشت گردی اور بربریت قراردیتے ہوئے اسکی شدید مذمت کی۔انہوں نے کہا کہ بھارتی فوجیوں نے جس طرح براہ راست فائرنگ کے ذریعے بے گناہ کشمیریوں کو شہید اور سینکڑوں کو زخمی کیا اس سے لگتا ہے کہ بھارت نے کشمیریوں کے خلاف اعلان جنگ کررکھا ہے۔ میرواعظ نے ایس ایم ایچ ایس ہسپتال سرینگر میں زیر علاج زخمی کشمیریوں اورخواتین کے ساتھ زیادتی اور ان پرتشدد کو ریاستی دہشت گردی کی بدترین مثال قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جموں وکشمیر میں تعینات بھارتی فوجی اور پولیس اہلکار بے لگام ہوگئے ہیں۔ اور اس حقیقت کو تسلیم کر لینا چاہئے کہ کشمیر ی عوام بالادستی سے سیاست کا ری کو کسی بھی طور قبول کرنے کیلئے تیار نہیں

 

 

 

 

 

 

 

 

This entry was posted in: Uncategorized

by

Vision 21 is Pakistan based non-profit, non- party Socio-Political organisation. We work through research and advocacy for developing and improving Human Capital, by focusing on Poverty and Misery Alleviation, Rights Awareness, Human Dignity, Women empowerment and Justice as a right and obligation. We act to promote and actively seek Human well-being and happiness by working side by side with the deprived and have-nots.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s