Uncategorized
Comment 1

خواتین کا عالمی دن


تحریر:ساحرہ ظفر

تم مجھے پڑھی لکھی عورتیں دو میں تمھیں  پڑھا لکھا معاشرہ دوں گا

( نیپولن)

خواتین کسی بھی معاشرے  کے لیے ریڑھ کی ہڈی  کی حثیت رکھتی ہیں اس کے بغیر  نہ انسان چل سکتا ہے نہ ہی کوئی  بیٹھ سکتا ہے بس لیٹا رہتا ہے

8

مارچ خواتین کا عالمی دن ہے اس تاریخی دن کا پس منظر یہ ہے کہ مارچ 1907ء کو امریکہ کے شہر نیو یارک میں لباس سازی کی صنعت سے وابستہ سینکڑوں کارکن خواتین نے مردوں کے مساوی حقوق اور بہتر حالات کار کیلئے زبردست مظاہرہ کیا۔ ان کا مطالبہ تھا کہ دس گھنٹے محنت کے عوض معقول تنخواہیں دی جائیں۔ انکے اس احتجاج پر پولیس نے لاٹھی چارج کیا۔ اس واقعہ کے ایک برس بعد 8 مارچ 1908ء کو نیو یارک ہی میں سوئی سازی کی صنعت سے تعلق رکھنے والی خواتین نے ووٹ کے حق اور بچوں کی جبری مشقت کے خاتمے کیلئے مظاہرہ کیا۔ اس مظاہرے پر بھی حکومتی مشینری نے پولیس کے ذریعے تشدد کیا۔ گھڑ سوار پولیس نے سینکڑوں خواتین کو لاٹھیوں سے مار مار کر لہو لہان کردیا۔ خواتین کو بالوں سے پکڑ کر سڑک پر دور تک گھسیٹا گیا۔ نہ صرف یہ بلکہ بہت سی خواتین کو جیلوں میں بند کردیا گیا۔ اس وقت سے لیکر آج تک خواتین اپنے حقوق کیلئے آواز بلند کررہی ہیں۔

اس دفعہ ویژن 21 نے اُن  خواتین کو   مدعو کیا  جو گھر میں اپنی 24 گھنٹے  خدمات کی سروس دیتی ہیں نہ تھکتی ہیں اور نہ ہی معاوضہ لیتی ہیں ۔

ا ن خواتین کا تعلق راولپنڈی کے ایک پسماندہ علاقے غریب آباد سے ہے  عالمی دن کے موقع پر خواتین  میں  زیادہ تر ایسی تھی جو مائیں تھی کچھ خواتین  10 بچوں کی کفالت  کر رہی ہیں اور کچھ پانچ چھ  سے زائد کی ۔

خواتین کے دن کے موقع پر تمام عورتوں نے ویژن 21 کی ٹیم کو  بتایا کہ اوائل عمری میں  غربت اور تعلیم کی راہ میں حائل رکاوٹوں کی وجہ سے وہ اپنی تعلیم کو برقرار نہیں رکھ  سکی۔ اکثر خواتین کبھی سکول  ہی نہیں سکی۔

لیکن اس  عمر میں بھی وہ اپنے بچوں کے ساتھ دوبارہ تعلیم  حاصل کرنا چاہتی ہیں اس کے ساتھ کچھ  عورتوں کا کہنا تھا کہ وہ سلائی کڑھائی اور بہت سے کام  جانتی ہیں جس سے اُن کو دوسروں کے آگے بھیک نہ مانگی پڑے وہ کرنا چا ہتی ہیں۔

ویژن   21کی ٹیم نے  نے خواتین کو  کہا وہ اُن کے محلے میں سپیڈ لٹریسی کے نام سے ایک  ایسا سنٹر بنائیں گے جس سے نہ صرف  خواتین کو  پڑھنے کا موقع ملے گا بلکہ اس کے ساتھ وہ اپنے ہنر کے ذریعے روزگار کے نت نئے راستے تلاش کرنے م میں بھی کامیاب ہوں گی۔

ویژن 21  ایک ایسا ادارہ  ہے  جس کے زیر سایہ مختلف پروجیکٹ  کے ساتھ  ساتھ سپیڈ لٹریسی  پروگرام کے نام سے ایک  ایسا پروگرام ہے جو 2011 سے اُن بچوں کو تعلیم دے رہا ہے جو سکول کی فیس نہیں دے سکتے یا عمر زیادہ ہونے کی وجہ سے سکول نہیں جا سکتے یا پھر کبھی سکول گئے ہی نہ ہوں  اس کے ساتھ    ساتھ بالغ  لوگوں کی فلاح بہبود کے لیے سر گرم ہے۔

https://www.facebook.com/Vision21Foundation/

https://www.facebook.com/SpeedLiteracy/

https://www.facebook.com/V4Pak/

تمام خواتین نے اس بات کا عہد کیا کہ وہ  اپنی رُکی ہوئی تعلیم کو ایک دفعہ پھر پایہ تکمیل تک پہنچائیں گی تاکہ ہم بھی  معاشرے کو پڑھی لکھی خواتین  کا تحفہ اپنے بچوں کی صورت میں دیں۔

 

This entry was posted in: Uncategorized

by

Vision 21 is Pakistan based non-profit, non- party Socio-Political organisation. We work through research and advocacy for developing and improving Human Capital, by focusing on Poverty and Misery Alleviation, Rights Awareness, Human Dignity, Women empowerment and Justice as a right and obligation. We act to promote and actively seek Human well-being and happiness by working side by side with the deprived and have-nots.

1 Comment

  1. عمرحیات says

    بہت نیک کم کر رہا ہے ویژن 21
    اللہ تعالی مزید ہمت دے آسانیاں دے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s