Uncategorized
Comments 2

مردم شماری


تحریر:ساحرہ ظفر

کسی بھی گھر کو چلانے کے لیے اُس کا بجٹ بنایا جاتا ہے اور بنانے سے پہلے گھر کا سربراہ یا بڑا  پہلے گھر کے افراد کو گنتا ہے تاکہ تمام افراد کو اُس کے پورے حقوق مل سکیں ساتھ ساتھ   لیڈر یہ فیصلہ کر سکے  کہ کس طرح اپنے ماتحت افراد کو بہتر سے بہتر سہولیات اور دیگر   ضروریات زندگی میسر کر سکے اس سارے حالات کو  مدنظر رکھتے ہوئے  ایک بہترین کنبہ اور معاشرہ تشکیل پاتا ہے  اور یہی معاشرہ کسی ملک یا قوم کی نمائندگی کرتا ہے۔

اس گننے کے عمل کو یعنی  کل آبادی کتنی ہے اس کو مردم شماری کا نام دیا جاتا ہے۔

کسی بھی ملک کی سمت کا درست تعین کرنے کے لیے سب سے پہلے اس بات کا  پتا ہونا  ضروری ہے کہ  اُس ملک میں بسنے والے باشندوں کی تعداد کیا ہے   پاکستان میں 15 مارچ سے مردم شماری کا آغاز ایک خوشا ئیند  اور اچھا اقدام ہےگو کہ  بہت ہی دیر یعنی 19 سال بعد   مردم شماری کا عمل شروع ہوا ہے ۔

مردم شماری کا عمل دو مراحل سے گزر کر پورا ہو گا جس میں  سب سے پہلے

مرحلے میں پنجاب کے 16 سندھ کے 8، خیبر پختونخوا کے7 اضلاع، فاٹا کی سات ایجنسیاں، بلوچستان کے 15، پاکستان کے زیر انتظام کشمیر اور گلگت بلستان کے پانچ پانچ اضلاع شامل ہیں۔

جبکہ دس دن کے وقفے کے بعد 25 اپریل سے  شروع ہونے والے دوسرے مرحلے میں پنجاب اور سندھ کے 21 21 اضلاع، خیبرپختونخوا کے 18، بلوچستان کے 17 اضلاع، وفاقی دارلحکومت اسلام آباد، پاکستان کے زیر انتظام کشمیر اور گلگت بلتستان کے پانچ پانچ اضلاع شامل ہیں۔

مردم شماری میں 118826 افراد پر مشتمل عملہ اور دو لاکھ فوجی اہلکار شامل ہیں۔

لیکن اس کے باوجو میری نظر میں اس کے چند  چیزیں  بہت اچھی ہیں اور کچھ چیزوں کو مزید بہتر کیا جا سکتا تھا مثال کے طور پر

مردم شماری کا عمل مزید بہتر اور وسیع بنانے کیے لیے گورنمنٹ کو 6 ماہ پہلے کام کرنا شروع کر دینا چاہیں تھا  مثلا  میڈیا میں ایک اشتہار 24 گھنٹے چلتا جس میں مردم شماری کے فوائد بتائے جاتے تاکہ گھر میں بیٹھے اُن لوگوں کی بہتر  رہنمائی ہو جاتی خاص طور پر وہ  لوگ جو پڑھے لکھے نہیں ہیں یا اُن کو فوائد نقصانات کا نہیں پتا وہ عملے کے گھر گھر جانے پر  زیادہ بہتر اور احسن طریقے سے گائیڈ کرتے بجائے اس کے وہ سیکورٹی کے ڈر سے دروازہ ہی نہ کھولیں۔

اس کے علاوہ تمام انسٹیوٹ میں بچوں کو  مردم شماری کے بارے میں بتایا جاتا تاکہ بچے گھر میں اپنے والدین کو اچھے طریقے سے سمجھا سکتے۔

حکومت پاکستان کو اپنے نصاب میں   مردم شماری کو شامل کرنے کی اشد ضرورت ہے  کہ  کیوں ضروری ہے اور نہ کی جائے تو کیا ہو گا۔

اس سارے عمل میں   حکومت پاکستان کے  9 سال کے التوا کے بعد ایک دفعہ پھر بھر پو ر طریقے سے مردم شماری اور خانہ شماری کا آغاز کر دیا ہے  جو ریاست کے لیے ایک اچھا اور بہتری کی طرف جانے کا احسن قدم ہے میں اور آپ ہم سب مل کر پورا تعاون کریں گے  مردم شماری کے عملے کو بہتر رہنمائی کے ساتھ ساتھ درست معلومات دیں تاکہ ملک  و قوم کو  ہم   درست  سمت کی طرف منحصر کر سکیں۔

 

This entry was posted in: Uncategorized

by

Vision 21 is Pakistan based non-profit, non- party Socio-Political organisation. We work through research and advocacy for developing and improving Human Capital, by focusing on Poverty and Misery Alleviation, Rights Awareness, Human Dignity, Women empowerment and Justice as a right and obligation. We act to promote and actively seek Human well-being and happiness by working side by side with the deprived and have-nots.

2 Comments

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s