Month: July 2017

سپریم کورٹ کے فیصلے کا اردو ترجمہ)

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں تحریر کیا ہے کہ قومی احتساب بیورو (نیب) اس فیصلے کے 6 ہفتوں کے اندر مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے-آئی-ٹی ) کی جانب سے اپنی رپورٹ میں اکٹھے کیے گئے اور ذکر کردہ مواد کی روشنی میں وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف-آئی-اے ) اور نیب کے پاس موجود مواد ( جس کا اِس سے تعلق بنتا ہو) کی بنیاد پر احتساب عدالت راولپنڈی کو درج ذیل ریفرنس بھیجے…! (ا) میاں محمد نواز شریف (مدعا علیہ نمبر 1)، مریم نواز شریف (مریم صفدر) (مدعا علیہ نمبر 6)، حسین نواز شریف (مدعا علیہ نمبر 7)، حسن نواز شریف (مدعا علیہ نمبر 8) اور کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر (مدعا علیہ نمبر 9) کے خلاف ایون فیلڈ کی جائیداد (فلیٹ نمبر 16، 16 اے، 17 اور 17 اے ایون فیلڈ ہاؤس، پارک لین، لندن، یو-کے) سے متعلق ریفرنس بھیجا جائے۔ اس ریفرنس کی تیاری اور اسے فائل کرنے کے عمل میں نیب، پانامہ کیس کے تفصیلی فیصلے میں بیان کی گئی تحقیقات میں حاصل ہونے والے مواد کو بھی دیکھے، (ب) مدعا علیہ نمبر 1 …

نااہل شریف

قارئین تصیح فرمالیں۔ گزشتہ کالم میں میں نے دو لفظ درست لکھے تھے لیکن غلطی سے غلط چھپ گئے۔ لفظ ’’فائنانس‘‘ ہے فنانس نہیں، اسی طرح ’’ہائوزنگ‘‘ ہے ’’ہائوسنگ‘‘ نہیں حالانکہ عموماً یونہی لکھے جاتے ہیں جو غلط ہے۔ گزشتہ کالم کا عنوان تھا ’’اس کا انجام دیکھنا ہے مجھے‘‘ تب تک ’’فیصلہ‘‘ کی تاریخ اور وقت کا کسی کو علم نہ تھا اور یہ مصرعہ میں نے اپنےاس شعر سے لیا؎ جس کا آغاز میں نے دیکھا تھا اس کا انجام دیکھنا ہے مجھے انجام سامنے ہے اور استاد محترم صوفی تبسم یاد آتے ہیں جو برسوں پہلے لکھ گئے۔ ’’آغاز بھی رسوائی انجام بھی رسوائی‘‘ یہی زندگی ہے اور یہی اس کا سبق بھی اگر کوئی سیکھنا سمجھنا چاہے کہ کانٹے کاشت کر کے کوئی کنول نہیں کاٹ سکتا۔ تم بدی بیج کر نیکی کی فصل نہیں اٹھا سکتے۔ تم شرپھیلا کر خیر نہیں سمیٹ سکتے اورانگارے دہکا کر اوس کی آس؟ محاورہ ہے ’’تھوتھا چنا باجے گھنا‘‘ آپ کو وہ وزیر یاد ہوگا جو خود کو لوہے کا چنا بتایا کرتا۔ میں …

لاہور دھماکہ اورخطے کی صورتحال؟

لاہور فیروزپور روڈ پرواقع سبزی منڈی میں دہشت گردوں کی حالیہ سفاکانہ کارروائی نے پوری قوم کو غمزدہ کردیا ہے۔ لاہور میں 5ماہ 8دن کے بعد ایک مرتبہ پھر دہشت گردی کا بڑا واقعہ رونما ہوا ہے۔ 2009سے لے کر اب تک دہشت گردی کے 20بڑے واقعات صوبائی دارالحکومت میں ہوچکے ہیں۔ جن میں سینکڑوں افراد لقمہ اجل بنے اور ان گنت افراد زخمی بھی ہوئے۔ دکھائی یہ دیتا ہے کہ دھماکے کا اصل ٹارگٹ پولیس اہلکار تھے اور سیکورٹی فورسز کو نشانہ بنانے کا مقصد درحقیقت ملکی دفاع کو کمزور کرنا تھا۔ پاکستان میں حالیہ دہشت گردی کے پیچھے ہندوستان کی را، اسرائیلی موساد اور امریکن سی آئی اے موجود ہے جو پاکستان کی سلامتی کے خلاف گٹھ جوڑ کرچکی ہیں۔ حکومت کو ان ملک دشمن قوتوں کے خلاف سخت ترین اقدامات کرنے چاہئیں۔ اس سے قبل بھی مال روڈ لاہور پر بم دھماکے میں پولیس افسران کو نشانہ بنایا گیا تھا۔ اس دھماکے میں 9پولیس اہلکار بھی شہید ہوئے۔ اگرچہ وزیراعظم نوازشریف، آرمی چیف، وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف سمیت تمام سیاسی قیادت نے …

A game-changer or what?

27-Jul-17by Shaheen Sehbai It’s not just the Emperor who had no clothes — many others had skeletons hidden in their closets by the dozen As the nation waits for a landmark judgment by the apex court, much of which seems written on the wall, what is being seriously watched is how far it may go to stop and reverse the southward slide of country’s moral fibre, decay of state institutions, political, financial or bureaucratic. The Panama ordeal and its revelations during the past year and a half have exposed more than anyone may have imagined. It told us that not just the king had no clothes, many others had skeletons hidden in their closets by the dozen. Institutions like the NAB, State Bank, SECP, FBR almost admitted their collapse. The SC judges declared NAB as dead and SECP chief was caught with his hands in the cookie jar and is now behind bars. The SBP and FBR were caught napping. The Parliament proved it was not even a debating room but a club of scavengers …

The difference between the poor and rich nations is not the age of the Nations

This can be demonstrated by countries like India and Egypt, which are more than 2000 years old and are still poor countries. On the other hand, Canada, Australia and New Zealand, which 150 years back were insignificant, today are developed and rich countries. The difference between the poor and rich nation does not also depend on the available natural resources. Japan has limited territory, 80% mountainous, unsuitable for agriculture or farming, but is the third in worlds economy. The country is like an immense floating factory, importing raw material from the whole world and exporting manufactured products. Second example is Switzerland, it does not grow cocoa but produces the best chocolates in the world. In her small territory she rears animals and cultivates the land only for four month in a year, nevertheless manufactures the best milk products. A small country which is an image of security which has made it the strongest world bank. Executives from rich countries who interact with their counterparts from poor countries show no significant intellectual differences. The racial or …

ماں جی آپ نے اپنا دل صاف کرنا کس سے سیکھا؟

انہوں نے ہنستے ہوئے جواب دیا کہ دودھ والے سے۔ سارہ بھی اس بات پر ہنس پڑی، پھرکچھ دیر قبل جیٹھانی سے فون پر اپنی تلخ کلامی پر شرمندہ ہوتے ہوئے ساس سے مخاطب ہوئی پتہ نہیں غصّے میں زیادہ ہی بول جاتی ہوں، بڑی ہیں مجھ سے لیکن انکی عادتیں بھی تو دیکھیں پچھلی بار بھی .. خیر چھوڑیں آپ بتائیں ناں ماں جی جیسے میں آپ سے اکثر باتیں سیکھتی ہوں آپ نے یہ بات کہاں سے سیکھی ؟کیونکہ میں نے اتنے عرصے میں آپکو لوگوں کی شکایتیں کرتے نہیں دیکھا ،حالانکہ کچھ لوگوں کے بہت غلط رویے بھی آپ کے ساتھ دیکھے ہیں میں نے۔ ماں جی نے بڑی بہو کیساتھ سارہ کی بدکلامی کو یکسر نظرانداز کرتے ہوۓ مسکراتے ہوۓ جواب دیا۔ “پتر مذاق نہیں سچ بتا رہی ہوں۔ واقعی دودھ والے ہی نےسکھایا تھا یہ سبق ، میں چھوٹی تھی جب کوئی بارہ سال کی رہی ہونگی ،فجر پر بھائی اور ابّا جی تو مسجد گۓ ہوتے امّاں جی صحن میں قران پڑھ رہی ہوتیں کہ دودھ والے بابے کی …

’’ رائیونڈ محل کی کہانی‘‘

لاہور میں موجود نواز شریف کی رہائش گاہ کو رائیونڈ محل کہا جاتا ہے۔ یہ نواز شریف کی والدہ کے نام پر ہے۔رائونڈ محل کا احاطہ 1700 ایکڑ یا 13600 کنال ہے (ملحقہ خریدی گئی زمین بھی شامل کی جائے تو 25000 ہزار کنال سے زائد )۔ یہاں جانے کے لیے ایک خصوصی گیٹ بنایا گیا ہے جس پر نواز شریف کی والدہ بیگم شمیم شریف اور بیٹی مریم نواز کے نام بڑے بڑے حروف میں کندہ کیے گئے ۔ شاہی رہائش گاہ میں 3 باورچی خانے، 3 ڈرائینگ روم، ایک سوئمنگ پول ، ایک مچھلی فارم ، ایک چھوٹا سا چڑیا گھر اور ایک جھیل شامل ہے۔ اس علاقے میں میاں شریف نے جو زمین خریدی اس کو قومی خزانے سے پیسے خرچ کر کے جدید سہولیات سے آراستہ کیا گیا۔اس رہائش گاہ میں تقریباً 1500 ملازمین کام کرتے ہیں جنکی مجموعی ماہانہ تنخواہ کروڑوں روپے بنتی ہے۔وزیراعطم نواز شریف جب دوسری بار وزیرآعظم بنے تب انہوں نے رائیونڈ محل کی تعمیر و آرائش پر خصوصی توجہ دی۔ تعمیرات کا یہ کام(FWO) فرنٹیئر ورکس …